ویڑیو

ای پیپر

اہم خبریں

سرینگر /22مئی / این این این
انتظامیہ کی جانب سے رہبر جنگلات، رہبر زراعت،.

سرینگر /22مئی / این این این بارشوں کے بعد جموں کشمیر کے کئی علاقوں میں شبانہ.

کیمپ میں سینکڑوں مریضوں کا طبی معائنہ کیا گیا اور مفت ادویات بھی تقسیم کی.

ہائبرڈ عسکری نیٹ ورک کو توڑنے کیلئے وادی میں این آئی اے نے ڈھیرہ ڈال دیا

   86 Views   |      |   Sunday, May, 22, 2022

این آ ئی اے کی خصوصی عدالت نے چار افرادکودس بارہ سال قید اور جرمانے کی سزاسنائی

خفیہ ایجنسیوں نے پُرانے خفیہ نیٹ ورک کر متحرک کیا ، این آئی اے کے سو کے قریب افسران تعینات
سرینگر/ 14 اکتوبر // وادی کشمیر میں ٹارگیٹ کلنگ کے نیٹ ورک کو طشت از بام کرنے اور شہری ہلاکتوں میں ملوث مبینہ حملہ آوروں کو گرفتار کرنے کیلئے خفیہ ایجنسیوں نے پُرانے نیٹ ورک کر متحرک کرلیا ہے ۔ اس دوران وادی کشمیر میں مختلف خفیہ ایجنسیاں جن میں را ، آئی بی ، سی آئی ڈی ، سی آئی کے اور دیگر خفیہ اداروں کو متحرک کردیا گیا ہے ۔ اس کے ساتھ ساتھ این آئی کی ٹیم بھی وادی میں ڈھیرہ ڈالے ہوئے ہیں جن میں قریب 100افسران وادی میں اس وقت تحقیقاتی عمل کا حصہ ہیں جن میں ایس ایس پی رینک کے افسران بھی شامل ہیں ۔ کرنٹ نیوز آف انڈیا کے مطابق نیشنل انویسٹی گیشن ایجنسی (این آئی اے) کی ایک بڑی ٹیم نے کشمیر میں ڈیرے ڈال رکھے ہیں تاکہ کشمیر میں ٹارگٹ کلنگ کے واقعات میں ملوث ہائبرڈ اور پارٹ ٹائم ملٹنسی کے نیٹ ورک کو تباہ کیا جا سکے۔ کئی سینئر افسران کشمیر میں ڈیرے ڈالے ہوئے ہیں۔ سو سے زائد افسران اور اہلکاروں کا عملہ مقامی لوگوں سے معلومات اکٹھا کرکے اس نیٹ ورک کو توڑنے کے لیے کام کر رہا ہے۔ذرائع نے بتایا ہے کہ عسکریت پسند مقامی لوگوں کی پناہ لے کر اور نوجوانوں کو دھوکہ دے کر ٹارگٹ کلنگ بھی کر رہے ہیں۔پورے نیٹ ورک کو تباہ کرنے کے لیے این آئی اے افسران ذاتی طور پر لمحہ بہ لمحہ نقل و حرکت پر نظر رکھے ہوئے ہیں۔ این آئی اے ٹیموں نے ملک کی دیگر ریاستوں میں موجود او جی ورکرز کا بھی سراغ لگایا ہے۔ ان کی گرفتاری کے لیے این آئی اے کی دیگر ٹیمیں تعینات کی گئی ہیں۔معلومات کے مطابق این آئی اے کے 100 سے زائد افسران اور اہلکار کشمیر میں تعینات کیے گئے ہیں تاکہ ٹارگٹ کلنگ کی سازش میں ملوث افراد کی شناخت اور ان کو پکڑا جا سکے۔ ان میں ایس ایس پی سطح کے افسران بھی کشمیر میں موجود ہیں۔ این آئی اے کا ہیڈ آفس جموں میں ہے ، لیکن اس وقت جموں میں تعینات تمام سینئر افسران ، تکنیکی ماہرین کی ٹیمیں کشمیر میں تعینات کی گئی ہیں۔ذرائع کا کہنا ہے کہ این آئی اے کی ٹیم نے جموں و کشمیر پولیس ، آئی بی ، را اور ملٹری انٹیلی جنس کے انٹیلی جنس ونگ کی بھی مدد لی ہے۔ این آئی اے ان تمام خفیہ ایجنسیوں کی مدد لے رہی ہے ، تاکہ ٹارگٹ کلنگ کے واقعات کو روکا جا سکے۔ مذکورہ ایجنسیوں کا کشمیر میں پرانا انٹیلی جنس سسٹم ہے جس کو پھر سے متحرک کیا گیا ہے ۔ ذرائع نے بتایا کہ 1990میں جو ملٹنسی عروج پر تھی اسی طرح خفیہ اداروں نے جنگجوئوں کے خلاف کامیاب آپریشن انجام دئے تھے

متعلقہ خبریں

سرینگر /22مئی / این این این
انتظامیہ کی جانب سے رہبر جنگلات، رہبر زراعت، اور رہبر کھیل کے تحت ہوئیں تعیناتیوں.

سرینگر /22مئی / این این این بارشوں کے بعد جموں کشمیر کے کئی علاقوں میں شبانہ درجہ حرارت معمول سے کچھ نیچے درج کیا گیا.

کیمپ میں سینکڑوں مریضوں کا طبی معائنہ کیا گیا اور مفت ادویات بھی تقسیم کی گئیں پلوامہ/ تنہا ایاز/ جنوبی ضلع پلوامہ.

سرینگر /21مئی // این این این سرینگر جموں شاہراہ پر خونی نالے کے قریب زیر تعمیر ٹنل مہند م ہونے کے بعد لاپتہ مزدوروں.

صدرِ نیشنل کانفرنس ڈاکٹر فاروق عبداللہ (رکن پارلیمان) نے آج نٹی محلہ میر بحری کلان رینہ واری (ڈل) جاکر وہاں گذشتہ.