بہٕ سمجھا جانوارن ہنز بوٗلی 0

بہٕ سمجھا جانوارن ہنز بوٗلی

سبدر شبیر

حضرت موسٔی علیہ سلام سندس زمانس منز اوس اکھ بندٕ تمِس لوگ پتہ زِ موسی علیہ سلام چُھ کوہ طورس پیٹھ گژھان تہٕ رب ذوالجلالس ستی چِھ ہمکلام سپدان۔ أمس اوس ؤنی شوق زِ میہ گٔژھی جانوارن ہنز بوٗلی سمجھ ینی۔ رب ذوالجلال سنز شان ؤچھو أمی وون حضرت موسٔی علیہ سلامس اے حضرت موسٔی علیہ سلام ییلہِ توہیہ کوہ طورس پیٹھ گژھو تہٕ میہ خاطرٕ کٔرزیو دعا زِ میہ گژھِ جانوارن ہنز بوٗلی سمجھ ینی (علمناہ منطق الطیر) یہ معاملہ گژھِ میہ ستی تہِ گژھن۔ حضرت موسٔی علیہ سلامن کور دعا تہٕ أمس لٔج جانوارن ہنز بوٗلی سمجھ ینی ۔ دویمہ دوہ صبحس ووتھ یِہ شخص أمس اوس کھین چھین منز بچومت کینہہ تہٕ أمی تروو یہ مکان کِس صحنس منز تہٕ کوکر آو دوان دوان تہٕ نیون اَمہ منز ژوچہِ ٹکرٕ اکھ کڈتھ تہٕ ژول تہٕ کھیون بیہ طرفہٕ آو ہوٗن دوان دوان مگر کوکرن اوس یہِ ژوچہ ٹکرٕ کھیومت تہٕ وونُن کوکرس دپونس میانہ دوستہٕ کمس کم کرۍ زہیہ انصاف میہ ستی ژے چُھیہ نا معلوم زِ رآتی راتس چُھس بہٕ ہوشار آسان بہٕ چُھس اکھ سکورٹی گارڈ تہٕ میہ اوس نائٹ شفٹ یعنی بہٕ اوسس رآتی راتس ڈیوٹی ؤنی کیس اوس میہ شونگنُک پہر تہٕ یہِ کھیتھ تراوٕہا بہٕ آرام ژے میلہِ بیہ کینہ دوہس منز کوکرن وونس زِ فکر ما کر أمس چُھ اکھ گُر تہٕ سُہ مَرِ از تہٕ ژے میلہِ سیٹھاہ ماز دوپنس ژٕ کیاز چھکھ فکر مند؟ یہِ شخص چُھ یہِ بوزان تہٕ أمس گیہ وأراگ طاری تہٕ گوو جلدی تہٕ آو أمس گُرس بازرس منز کٔنِتھ تہٕ ونان چُھ زِ میہ کوٗتاہ آو امہِ ستی فائدہ بہٕ بچوس نقصان نِش۔ دویمہ دوہ ووتھ یِہ بیہ صبحس تہٕ ترون ژوچہِ ٹکرٕ مکانکس صحنس کُن کوکر تہٕ ہون آو دوان دوان دوشوئی ترأوی ووٹھ مگر کوکر گوو بیہ کامیاب ژوچہِ ٹکر ننس منز ہوٗنی وون کوکرس ژٕ چُکھ اکھ غاری زمہ دار جانورراتھ تہِ اوسس بہِ فاقہٕ ہوت کوکرن وونس پریشان مسا گژھ أمس چُھ اکھ خر سُہ مر از تہٕ ژٕ کرکھ پتہٕ شاہی یہِ شخص اوس کوکرس تہٕ ہوٗن سُند گفتگو بوزان یہ گوو پریشان خر تہِ مرے ؤنی یہ گوو جلد جلد بازر تہٕ آو خرس تہِ کنتھ تہٕ واپس یتھ وونن خاندارنہِ زِ ؤچھ اسہِ کوتہ میلیو فائد جانوارن ہنز بولی سمجھن ستی تہٕ دوشواے باژ گیہ سیٹھاہ خوش تہٕ ؤنی آو تریم دوہ حسب معمول تراو أمی بیہ ژوچہِ ٹکرٕ مکانکس صحنس منز ہوٗن تہٕ کوکر آو دوان دوان تہٕ مگر ییمہِ وزِ تہِ گوو کوکر کامیاب ننس منز تہٕ ہوٗنس کھوت سخ شرارت تہٕ وونن کوکرس ژٕ چُھکھ اپزیور ویسے چُھکھ ژہ بانگ دوان تہٕ چانی حالت چِھ یِہ ز ژہ چھکھ اپز ونان زہ دوہ واتی ژے لگاتار اپز وننان۔ کوکر ووتھس تہٕ دوپنس دنیاہس منز چُھس بہٕ جانوارن ہندِ خاطرٕ بانگ دنہ وول تہٕ اپز وونن چُھ میانہِ خاطرٕ بے شعوری یاد تھاو میانہِ یارٕ از مرِ یہِ مالک تہٕ وازوان ییہ تیار کرنہٕ اڈیجہ تہِ بنن واریاہ تہٕ ژے چُھیہ ونی مزے مزٕ یہ مالک چُھ بوزان تہٕ جل جل گوو موسی علیہ سلامس نش تہٕ دوپنس اے موسی علیہ سلام از وون کوکرن یتھ پاٹھ مگر موسی علیہ سلامن تہِ وُچھ ملک الموت یوان تہٕ موسی علیہ سلامن وونس چانس مقدرس منز اوس لیکتھ زِ چانس گرس منز ییہ موت کانسہِ مگر یہ اوس نہٕ طے زِ کَس ییہِ یہِ اوسنہِ مخصوص آمت کرنہٕ کنہہ تہِ۔ اللہ سبحانہ وتعالی ہن ہوت چون گُر نیون تہٕ ژے نیوتھ سُہ بازار تہ اکھ کٔنتھ ہوتن چون خر نیون مگر ژٕ بنیوکھ سمارٹ ژے نیوتھ یتہِ بازر تہٕ آکھ کنتھ اللہ سبحانہ وتعالی ہن کور یہ ونی ژے کُن شفٹ ملک الموت آو تہ نیون أمس زو کڈتھ۔
امیہ حکایت تلہٕ چُھ اسہ یہ سمجھ تران زِ رب ذوالجلال یہِ کرِ تتھ منز چُھ بندٕ سندی خاطرٕ خارۍ آسان تہٕ رب ذوالجلال چُھ پنس بندٕ سندی ہمیشہ رُت کانچھان، تہٕ پرتھ کانسہ انسانس پزِ پنہ نِس تقدیرس پیٹھ رأضی روزُن تہٕ دوہ کھوتہٕ دوہ یہِ یقین مضبوط کُرن۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں