ویڑیو

ای پیپر

اہم خبریں

جموں کے بکرم چوک میں ایک المناک حادثے میں گاڑی دریا تیوی میں گر گئی جس کے.

پولیس نے دعویٰ کیا ہے کہ سادھنا ٹاپ پر خاتون سمیت تین افراد سات کلو نارکوٹکس.

گاندربل میں نوجوان کو مردہ پایا گیا وسطی ضلعع گاندربل کے گاڈوہ کھیتوں میں.

وادی میں کوروناوائرس کی دوسری لہر شروع پھر بھی لوگ بے فکر

   83 Views   |      |   Saturday, May, 28, 2022

کورونا کے کیسوں میں اضافہ کیساتھ ہی شفایابی کا سلسلہ بھی تیز

متاثرین کی تعداد کے ساتھ ساتھ مرنے والوں میں بھی ہورہا ہے پھر اضافہ

سرینگر/15نومبر/وادی میں کوروناوائرس کا مسلسل پھیلتا جارہا ہے اوراموات بھی پھر سے بڑھ رہی ہے ۔ اگرچہ گزشتہ ماہ وائرس میں متاثرین کی تعداد کمی سامنے آرہی تھی اور اموات کی شرح بھی گھٹ رہی تھی تاہم اب پھر سے اس میں اضافہ ہونے لگا ہے اور کووڈ سے مرنے والوں کی تعداد پھر بڑھ رہی ہے ۔ کرنٹ نیوزآف انڈیا کے مطابق وادی کشمیر میں کوروناوائرس کے کیسوں میں گزشہ کچھ دنوں سے پھر سے وائرس سے متاثرین کی تعداد بڑھ رہی ہے اور اس مہلک وائرس سے مرنے والوں میں بھی اضافہ ہورہا ہے ۔تاہم لوگ اب زیادہ بے فکر ہورہے ہیں۔ پہلے پہل جب وادی میں کوروناوائرس کے معاملات کافی کم سامنے آرہے تھے تو لوگوں میں سخت خوف پیدا ہوا تھا ۔ ہیلتھ گائڈ لائنوں اور سرکاری ہدایت پر ہر کوئی سختی سے عمل کرتا دکھائی دے رہا تھا لیکن دھیرے دھیرے جتنے کیس بڑھتے گئے اُسی قدر لوگوں کے دلوں سے وائرس کا خوف نکلتا گیا اوراحتیاطی تدابیر پر لوگوںنے دھیرے دھیرے عمل کرنا چھوڑدیا ۔لوگ اب اس قدر بے خوف ہوچکے ہیں کہ نہ کسی جگہ سماجی دوری کا خیال رکھا جارہا ہے اور ناہی ماسک کا استعمال کیا جارہا ہے خاص کر شادی بیاہ کی تقریبات ، تعزیتی تقریبات اور دیگر سماجی پروگراموں میں لوگ باالکل ہی بے خبری کے عالم میں رہتے ہیں جس کے نتیجے میں یہ ڈیڈلی وائرس اور زیادہ لوگوں کو اپنی لپیٹ میں لے رہا ہے ۔ دنیا کے بیشتر ترقی یافتہ ممالک میں کووڈ19کے نتیجے میں جو تباہی ہوئی اس سے یہ صاف ظاہر ہوتا ہے کہ یہ مہلک وائرس معمولی نہیں ہے بلکہ یہ ایک جان لیوا وائرس ہے جو کسی بھی عمر کے انسان کو اپنی لپیٹ میں لیکر موت کی آغوش میں پہنچاتا ہے ۔ لیکن وادی کشمیر میں ہر معاملے کو جس طرح لوگ ہلکا لے رہے ہیں اسی طرح لوگوںنے اس ’’ڈیڈلی‘‘ وائرس کو بھی معمولی سمجھ کر اس کے تئیں غفلت اور لاپرواہی برتنی شروع کی جو بھیانک ثابت ہورہا ہے ۔ ماہرین طب کا ماننا ہے کہ سردیوںمیں یہ وائرس زیادہ اثر دار ثابت ہوسکتا ہے کیوںکہ وادی کشمیر میں سردیوںکا موسم ایک لمبے عرصے تک رہتا ہے قریب آٹھ ماہ سردی کا اثر رہنے کے نتیجے میں یہ وائرس لوگوں کو زیادہ متاثر کرسکتا ہے۔ محکمہ ہیلتھ سروسز سے جڑے افراد اس وائرس سے لڑنے میں جی توڑ کوششیں کررہے ہیں ۔

متعلقہ خبریں

جموں کے بکرم چوک میں ایک المناک حادثے میں گاڑی دریا تیوی میں گر گئی جس کے نتیجے میں ڈرائیو اور کنڈیکٹر کی موت ہوئی پولیس.

پولیس نے دعویٰ کیا ہے کہ سادھنا ٹاپ پر خاتون سمیت تین افراد سات کلو نارکوٹکس اور 2آئی ای ڈی سمیت گرفتار کئے گئے پولیس.

گاندربل میں نوجوان کو مردہ پایا گیا وسطی ضلعع گاندربل کے گاڈوہ کھیتوں میں 28سال کے نوجوان کی نعش برآمد کرلی گئی پولس.

صدرِ جموں وکشمیر نیشنل کانفرنس و رکن پارلیمان ڈاکٹر فاروق عبد للہ نے حضرت میرک شاہ صاحب ؒ کے سالانہ عرص مبارک باد.

کونہِ بل پانپور میں آج صبح ایک دلدوز سانحہ پیش آیا جسمیں دو افراد موت کی آغوش میں چلے گۓ۔ کونہِ بل علاقے میں کھیتوں.