ویڑیو

ای پیپر

اہم خبریں

اورنگ آباد۔ انجمن فروغ سائنس، چیپٹر اورنگ آباد(مہاراشٹر) کے مجلس عاملہ.

محترمہ رخسانہ جبین اور پروفیسر محفوظہ جان کو ادارے کی طرف سے شاندار ادبی.

وسطی کشمیر کے ضلع بڈگام کے بدرن ماگام میں تحریک ساز ادبی اور ثقافتی انجمن.

جموں کشمیر میں برفانی چیتوں کی نسل کو بچانے کیلئے سرکاری سطح پر اقدامات

   125 Views   |      |   Thursday, August, 18, 2022

پہلی بار برفانی چیتے کی گنتی کی مہم شروع، 12 ٹیمیں ہائی ایلٹیٹیوڈ مہم کے لیے روانہ

سرینگر/10نومبر// جموں و کشمیر میں پہلی بار برفانی چیتے کی تعداد معلوم کرنے کے لیے ایک خصوصی آپریشن شروع کیا گیا ہے۔ پروجیکٹ سنو لیپرڈ کے تحت جموں کے منڈا چڑیا گھر سے 48 ماہرین کی 12 ٹیمیں روانہ کی گئیں۔کرنٹ نیوز آف انڈیا کے مطابق جموں و کشمیر میں پہلی بار برفانی چیتے کی تلاش، رہائش اور تحفظ کے لیے ایک خصوصی آپریشن شروع کیا گیا ہے۔پروجیکٹ سنو لیپرڈ کے تحت جموں کے منڈا چڑیا گھر سے 48 ماہرین کی 12 ٹیمیں روانہ کی گئیں۔کشتواڑ ہائی ایلٹیٹیوڈ نیشنل پارک کے تحت موسم کے چیلنجوں کے درمیان مہینوں تک مطالعہ کرکے ڈیٹا اکٹھا کریں گے۔ 2195.50 مربع رقبے پر پھیلے ہوئے نیشنل پارک میں مہم مکمل کرنے کے بعد، ٹیمیں مئی-جون 2022 تک اپنی رپورٹ مرکز کو پیش کریں گی۔انٹرنیشنل یونین فار کنزرویشن آف نیچر (IUCN) میں درج برفانی چیتے زیادہ تر 3000 اور 4500 میٹر کے درمیان اونچائی پر پائے جاتے ہیں۔ یہ کشتواڑ نیشنل پارک اور اس کے ملحقہ علاقوں میں دیکھے گئے ہیں۔ جموں ڈویژن کے اونچے پہاڑی جنگلات، کشمیر وادی کے برفانی چیتے کشمیر میں کے گریز، تھجواس اور دیگر علاقوںمیں دیکھے گئے ہیں۔ان علاقوں میں برفانی چیتے کی ہمالیہ کے بلند پہاڑی علاقوں میں برفانی چیتے پائے جاتے ہیں۔یہ وسطی ایشیا، جنوبی ایشیا، چین اور روس میں بھی پایا گیا ہے لیکن ماحولیات میں ہونے والی تبدیلیوں کی وجہ سے اس نوع کا وجود برفانی چیتا ہندوستان میں اور اس سے قبل لداخ، ہماچل پردیش، سکم میں پرجاتیوں کی بحالی کے پروگرام کا حصہ ہے۔ اور اتراکھنڈ۔ یہ پروگرام تب سے چلایا جا رہا ہے۔ منڈا چڑیا گھر جموں سے محکمہ جاتی ٹیم کو روانہ کرتے ہوئے چیف وائلڈ لائف وارڈن سریش کمار گپتا نے کہا کہ جموں و کشمیر میں پہلی بار چیتے پرسروے کیا جا رہا ہے۔جموں کی تنظیم نو کے بعد برف کی آبادی کے تخمینے کے تحت ایک تفصیلی پروجیکٹ رپورٹ تیار کی گئی ہے۔ اور کشمیر کو اس سال اپریل میں حکومت کے حوالے کر دیا گیا۔ممکنہ برفانی چیتے کے ساتھ کشمیر کے برف سے ڈھکے علاقوں میں الگ الگ محکمانہ ٹیمیں بھیجنے کی تیاریاں جاری ہیں۔ ÂNCFâ کے نیچر کنزرویشن فاؤنڈیشن ریسورس کے اہلکاروں نے سروے کے لیے جموں اور کشمیر دونوں ڈویڑنوں کی ٹیموں کو تربیت دی ہے۔ اب مشق کرنے کا ایک اچھا وقت ہے، کیونکہ کھانا پکانے والی آبادی پہاڑی علاقوں سے میدانی علاقوں میں منتقل ہوتی ہے۔ اور جنگلی جانور بھی ایسا ہی کرتے ہیں۔جموں اور کشمیر کے برفانی چیتے کی آبادی کے اعداد و شمار کو مرکزی حکومت کے ذریعہ 23 اکتوبر کو جاری کیے جانے والے قومی ڈیٹا بیس میں شامل کیا جائے گا۔ مئی-جون 2022 تک سروے مکمل کرنے کا منصوبہ۔ مستقبل کے لیے برفانی چیتے کے تحفظ کے لیے لینڈ سکیپ مینجمنٹ پلان اس مہم میں بھدرواہ کیمپس، جموں یونیورسٹی، شیر کشمیر یونیورسٹی آف ایگریکلچرل سائنس اینڈ ٹیکنالوجی، کشمیر، این جی اوز اور دیگر جنگلی حیات کے گروپوں کے ساتھ تعاون کی کوشش کی جا رہی ہے۔کشمیر میں محکمہ جنگلی حیات کے تحفظ کی جانب سے گزشتہ ماہ آزمائش کے لیے ایک پائلٹ سروے کیا گیا تھا۔محکمہ جاتی ٹیمیں طے شدہ پروٹوکول کے مطابق برفانی چیتے کی آبادی کا سروے کریں گی، ان کے رہنے کی جگہوں کی نشاندہی کی جائے گی اور عادات کا مشاہدہ کیا جائے گا، ٹریپس کے علاوہ ٹیمیں بالوں کے نمونے، خراشیں اور دیگر شواہد اکٹھے کریں گی، پھر ان کا ڈی این اے تجزیہ کیا جائے گا۔ درست ڈیٹا کو یقینی بنانے کے لیے اسے بنگلور میں واقع مرکزی حکومت کے انسٹی ٹیوٹ کو بھیجا جائے گا۔

متعلقہ خبریں

اورنگ آباد۔ انجمن فروغ سائنس، چیپٹر اورنگ آباد(مہاراشٹر) کے مجلس عاملہ کا انتخاب سپریم گلوبل اسکول کے میٹنگ ہال.

محترمہ رخسانہ جبین اور پروفیسر محفوظہ جان کو ادارے کی طرف سے شاندار ادبی اعزاز “نشانٍ کشمیر” عطا کیا جانے.

وسطی کشمیر کے ضلع بڈگام کے بدرن ماگام میں تحریک ساز ادبی اور ثقافتی انجمن گلشن کلچرل فورم کشمیرکے اہتمام سے منعقدہ.

قاضٰ گنڈ :جنوبی کشمیر کے کولگام ضلع میں قاضی گنڈ کے مقام پر آج دو پہر جموں سے سرینگر آرہی یا تریو سے بھری ایک.

عوام میں تفرقہ ڈالنے والوں سے ہوشیار رہنے کی ضرورت:/ڈاکٹر فاروق عبداللہ
سرینگر// 6جولائی //این این این جموں وکشمیر.