ویڑیو

ای پیپر

اہم خبریں

صدرِ جموں وکشمیر نیشنل کانفرنس و رکن پارلیمان ڈاکٹر فاروق عبد للہ نے حضرت.

کونہِ بل پانپور میں آج صبح ایک دلدوز سانحہ پیش آیا جسمیں دو افراد موت کی.

جنوبی قصبہ قاضی گنڈ میں ٹرین کی ٹکر سے 50 سال کی خاتون لقمہ اجل بن گئیں فہمیدہ.

بجٹ میں جموں وکشمیرکے صنعتی شعبے کیلئے کوئی روڈ میپ نہیں MSME کے سیکٹر میں مانگ کو بڑھانے کیلئے کچھ نہیں:FCIK

   119 Views   |      |   Saturday, May, 28, 2022

سری نگر:یکم ،فروری//فیڈریشن چیمبر آف انڈسٹریز کشمیر[FCIK) مرکزی وزیر خزانہ کی طرف سے پیش کردہ بجٹ2022-23 پر ناراض اور غیر اطمینان بخش ہے۔فیڈریشن چیمبر آف انڈسٹریز کشمیر دیکھتا ہے کہ بجٹ میں MSME کے سیکٹر میں مانگ کو بڑھانے کے لیے کچھ نہیں ہے۔جے کے این ایس کے مطابق ایک بیان میں، فیڈریشن چیمبر آف انڈسٹریز کشمیر کے سیکرٹری جنرل اویس قادر جامی نے کہا کہ اگرچہ ECGLS اسکیم کو 50ہزار کروڑ کے اضافی ادخال کے ساتھ مارچ 2023تک بڑھا دیا گیا ہے، لیکن MSME کے سیکٹر میں کام کے بغیر سرمائے کی انفیوڑن پیدا نہیں ہو رہی ہے۔ نتائج پہلے کی بحالی کی اسکیم نے مقصد پورا نہیں کیا کیونکہ ادا شدہ سود اور قسط کو کیپیٹلائز کیا گیا ہے اور اسے دوبارہ ترتیب دیا گیا ہے اور صنعت کو اگست2019 سے حکومت کی طرف سے نافذ کردہ لاک ڈاؤن کے ذریعہ کاروبار کے بند ہونے کیلئے مالی مدد کی توقع تھی، جو بدقسمتی سے صنعتی شعبے کو مایوس کرتا ہے۔ فیڈریشن چیمبر آف انڈسٹریز کشمیر جموں وکشمیر کے صنعتی سیکٹر کو موجودہ صنعتی شعبے کے لیے خصوصی پیکیج، فنڈز کی تقسیم اور مارکیٹنگ سپورٹ کی ضرورت ہے۔فیڈریشن کے سیکرٹری جنرل اویس قادر جامی نے کہا کہدفاعی بجٹ کا 68فیصد گھریلو کمپنیوں کی خریداری کے لیے رکھا جائے گا لیکن جموں و کشمیر کا صنعتی شعبہ اب بھی حکومت کی بے مثال پالیسیوں کی وجہ سے پبلک سیکٹر سے مارکیٹنگ حاصل کرنے کے لیے جدوجہد کر رہا ہے۔انہوںنے کہاکہ ایسا لگتا ہے کہ بجٹ میں موجودہ صنعتی شعبے کی بہتری کے لئے کوئی مالی مختص نہیں کیا گیا ہے، جس کی صنعت کو توقع تھی اور محرک کی بہت ضرورت تھی۔فیڈریشن چیمبر آف انڈسٹریز کشمیرنے کہاکہ وزیر خزانہ کی طرف سے مالی سال2022-23 کے لیے پیش کردہ بجٹ میں جموں وکشمیرکے صنعتی شعبے کے لیے کوئی روڈ میپ نہیں ہے۔ فیڈریشن چیمبر آف انڈسٹریز کشمیرکے مطابق کاغذات پر حکومت صنعتی شعبے کو ترقی دینے کی خواہشمند ہے اور مختلف ریاستوں کے سرمایہ کاروں کو جموں و کشمیر میں یونٹس قائم کرنے کی دعوت دے رہی ہے۔ لیکن موجودہ صنعتی شعبہ گزشتہ چند سالوں سے خاص طور پر اگست2019 کے بعد کے ہنگامہ خیز حالات کی وجہ سے بند ہونے کے دہانے پر ہے۔ فیڈریشن چیمبر آف انڈسٹریز کشمیرنے خبردارکیاکہ موجودہ صنعت بیماری کی طرف مڑ رہی ہے اور ممکنہ کاروباری افراد نئے یونٹس قائم کرنے سے دوری اختیار کر رہے ہیں۔

متعلقہ خبریں

صدرِ جموں وکشمیر نیشنل کانفرنس و رکن پارلیمان ڈاکٹر فاروق عبد للہ نے حضرت میرک شاہ صاحب ؒ کے سالانہ عرص مبارک باد.

کونہِ بل پانپور میں آج صبح ایک دلدوز سانحہ پیش آیا جسمیں دو افراد موت کی آغوش میں چلے گۓ۔ کونہِ بل علاقے میں کھیتوں.

جنوبی قصبہ قاضی گنڈ میں ٹرین کی ٹکر سے 50 سال کی خاتون لقمہ اجل بن گئیں فہمیدہ بانو زوجہ بشیر احمد ساکنہ پازنتھ نامی.

سرینگر کے صورہ اور اونتی پورہ کے آگہانجی پورہ علاقوں میں فوج و فورسز اور عسکریت پسندوں کے مابین مسلح تصادم آرائیوں.

سرینگر /26مئی جنوبی قصبہ اونتی پورہ کے آگہناز پورہ علاقے میں جمعرات کی شام فوج و فورسز اور عسکریت پسندوں کے مابین.