ویڑیو

ای پیپر

اہم خبریں

سرینگر / 24مئی /این این این //سرینگر کے صورہ علاقے میں مشتبہ عسکریت پسندوں کی.

سرینگر / 24مئی /این این این//نیشنل کانفرنس کے اراکین پارلیمان ایڈوکیٹ محمد.

سرینگر / 24مئی /این این این /جنوبی ضلع اننت ناگ کے سنگم علاقے میںسڑک کے المناک.

ویکسینز کی دو خوراکیں لانگ کووڈ کا خطرہ کم کرنے میں بھی مددگار

   57 Views   |      |   Wednesday, May, 25, 2022

طلبا میں کورونا وائرس کے کیس بڑھنے کے بعد مرکزی سرکار کا ایک اور بڑا اعلان

برطانیہ میں ہونے والی ایک طبی تحقیق میںسنسنی خیز انکشا ف
سرینگر27جنوری / ویکسینیشن کرانے والے افراد اگر کورونا وائرس سے متاثر ہوجائیں تو کووڈ کو شکست دینے کے بعد بھی طویل المعیاد علامات یا لانگ کووڈ کا خطرہ کم کرتا ہے۔ برطانیہ میں ہونے والی ایک طبی تحقیق میں کیا گیا کہ ویکسین کی 2 خوراکیں استعمال کرنے والے افراد کو اگر بریک تھرو انفیکشن (ویکسنیشن کے بعد بیماری کے لیے استعمال ہونے والی اصطلاح) کا سامنا ہوتا ہے تو ان میں لانگ کووڈ کا امکان41 فیصد تک کم ہوتا ہے۔تحقیق میں بتایا گیا کہ مجموعی طور پر ویکسینز کی دو خوراکیں استعمال کرنے والے 9.5 فیصد افراد کو لانگ کووڈ کا سامنا ہوا جبکہ ویکسینیشن نہ کرانے والے مریضوں میں یہ شرح14.6 فیصد تھی۔تحقیق اس لحاظ سے محدود تھی کہ ویکسینیشن کرانے والے افراد کے نمونے اوسطاً 238 دن تک پرانے تھے اور کورونا کی نئی اقسام اور دیگر عناصر کو مدنظر نہیں رکھا گیا۔مگر یہ نتائج ایک حالیہ تحقیق سے مطابقت رکھتے ہیں جس میں بتایا گیا تھا کہ کووڈ کے مریضوں میں مخصوص اینٹی باڈیز کی کمی سے لانگ کووڈ کا خطرہ بڑھتا ہے۔یونیورسٹی ہاسپٹل زیورخ کی تحقیق میں کووڈ کے مریضوں کے خون کے نمونوں کا تجزیہ کرنے پر دریافت کیا گیا کہ جن افراد کو وبائی مرض کو شکست دینے کے بعد طویل المعیاد علامات کا سامنا ہوا ان میں مخصوص اینٹی باڈیز کی سطح میں کمی اس مرض سے جلد صحتیاب ہونے والوں کے مقابلے میں عام ہوتی ہے۔اس سے قبل ستمبر 2021 میں کنگز کالج لندن کی ایک تحقیق میں بھی بتایا گیا تھا کہ ویکسینیشن سے لانگ کووڈ کا 49 فیصد تک کم ہوجاتا ہے۔محققین نے مختلف عناصر بشمول عمر، جسمانی یا ذہنی تنزلی اور دیگر کا موازنہ ویکسینیشن کے بعد ہونے والی بیماری سے کیا گیا۔تحقیق میں دریافت کیا گیا کہ اگر ویکسین کی 2 خوراکوں کے بعد بھی کوئی بدقسمتی سے کووڈ کا شکارہوجاتا ہے تو بھی اس میں طویل المعیاد علامات کا خطرہ ویکسینیشن نہ کرانے والے مریضوں کے مقابلے میں 49 فیصد کم ہوتا ہے۔اسی طرح ویکسینیشن کے بعد بیماری پر ہسپتال میں داخلے کا خطرہ 73 فیصد تک کم ہوتا ہے اور بیماری کی شدید علامات کا خطرہ 31 فیصد تک کم ہوتا ہے۔ان افراد میں عام علامات ویکسین استعمال نہ کرنے والے افراد سے ملتی جلتی ہے جن میں سونگھنے کی حس سے محرومی، کھانسی، بخار، سردرد اور تھکاوٹ قابل ذکر ہیں۔

متعلقہ خبریں

سرینگر / 24مئی /این این این //سرینگر کے صورہ علاقے میں مشتبہ عسکریت پسندوں کی فائرنگ میں پولیس اہلکار اور اس کی بیٹی.

سرینگر / 24مئی /این این این//نیشنل کانفرنس کے اراکین پارلیمان ایڈوکیٹ محمد اکبر لون اور جسٹس (ر) حسنین مسعودی نے دھان.

سرینگر / 24مئی /این این این /جنوبی ضلع اننت ناگ کے سنگم علاقے میںسڑک کے المناک حادثے میں 23سالہ موٹر سائیکل سوار لقمہ.

سرینگر / 24مئی /این این این //جنوبی ضلع کولگام کے ادی بل وٹو علاقے میں نالہ ویشو کے نزدیک ایک عدم شناخت شہری کی نعش.

نوٹ گزشتہ برسوں کے افسانوی ایونٹس کی کامیابی کو دیکھتے ہوئے ولر ادبی فورم نے اس سال بھی فن افسانہ کو فروغ دینے کے.