ویڑیو

ای پیپر

اہم خبریں

سرینگر / 24مئی /این این این //سرینگر کے صورہ علاقے میں مشتبہ عسکریت پسندوں کی.

سرینگر / 24مئی /این این این//نیشنل کانفرنس کے اراکین پارلیمان ایڈوکیٹ محمد.

سرینگر / 24مئی /این این این /جنوبی ضلع اننت ناگ کے سنگم علاقے میںسڑک کے المناک.

دبستان ادب رفیع آبادک سلسلہ وار پروگرام کہہ وءٹ یتھ منز حسن عجمی صابنی غزلہ مول آنکون آے کرنہ

   88 Views   |      |   Tuesday, May, 24, 2022

دبستان ادب رفیع آبادک سلسلہ وار پروگرام کہہ وءٹ یتھ منز حسن عجمی صابنی غزلہ مول آنکون آے کرنہ

ندائے کشمیر/توصیف رضا//دبستان ادب رفیع آبادک معروف پروگرام کہہ وءٹ منز سپز معروف شاعر حسن عجمی سنز غزلہ مول آنکون۔۔غزل پیٹھ کور معروف نوجوان شاعر ساگر سرفراز صابن کھولہ ڈولہ کتھ یتھ عام پزارایی میج۔محفل ہنز صدارت کری معروف ووستاد شاعر جناب نور الدین ہوش صابن تمو کری غزلہ تہ تبصرس پیٹھ مفصل کتھ۔پروگرامچ نظامت کر نوجوان شاعر الیاس آزاد صابن پنس منفرد اندازس منز دبستان ادب رفیع آبادک کنوینر جوہر رمضانن گاشراو پروگرامچ افادیت تہ کرکھ شریک محفل مہمانن ہند شکریہ زء اہند سیتی چھ سانہ پیجچ شان تہ شوب تمو کور تعمیل ارشاد ،نداے کشمیر تہ اخبار سنگر مالہ ہندن کار کنن ہند شکرہہ یمہ ادب خاطر بے واے کام چھ کران۔دوران پروگرام یمو ابی شخصیتو پنن تاثرات باو تمن منز چھ ڈاریکٹر جنرل دور درشن ڈاکٹر رفیق مسعودی معروف سکالر مقبول فیروزی۔معروف نعت گو تہ براڈکاسٹر غلام حسن غمگین۔یاسمین احد معروف شاعر گل تنویر صفرد یوسف ایوب دلبر ڈاکٹر مظفر مسرور غلام رسول وگے۔مجروع کشمیری۔میر ہلال یاسمین شاداب۔شبیر حقاق۔رءاض ہاکباری۔ساحل ڈار استاد نور الدین ہوش۔مشتاق کرمانی عشرت گل قابل ذکرہیں۔ پروگرامکس آخرس پیٹھ کور عجمی صابن شریک محفل تہ تاثرات دینہ والن ہند شکرانہ۔

متعلقہ خبریں

سرینگر / 24مئی /این این این //سرینگر کے صورہ علاقے میں مشتبہ عسکریت پسندوں کی فائرنگ میں پولیس اہلکار اور اس کی بیٹی.

سرینگر / 24مئی /این این این//نیشنل کانفرنس کے اراکین پارلیمان ایڈوکیٹ محمد اکبر لون اور جسٹس (ر) حسنین مسعودی نے دھان.

سرینگر / 24مئی /این این این /جنوبی ضلع اننت ناگ کے سنگم علاقے میںسڑک کے المناک حادثے میں 23سالہ موٹر سائیکل سوار لقمہ.

سرینگر / 24مئی /این این این //جنوبی ضلع کولگام کے ادی بل وٹو علاقے میں نالہ ویشو کے نزدیک ایک عدم شناخت شہری کی نعش.

نوٹ گزشتہ برسوں کے افسانوی ایونٹس کی کامیابی کو دیکھتے ہوئے ولر ادبی فورم نے اس سال بھی فن افسانہ کو فروغ دینے کے.