138

نامور شاعر اور صحافی مرحوم عبدالررحمان آزاد کی اہلیہ انتقال کر گئیں

مرحومہ معروف ادیب ڈاکٹر نزیر آزاد اور شکیل آزاد کی والدہ تھیں

دینی ،سماجی، صحافتی اور ادبی شخصیات نے دکھ اور افسوس کا اظہار کیا

پلوامہ/ تنہا ایاز/ندائے کشمیر نیوز// وادی کے نامور شاعر اور صحافی مرحوم عبدالررحمان آزاد کی اہلیہ انتقال کر گئیں۔ مرحومہ ڈاکٹر نذیر آزاد اور شکیل آزاد کی والدہ تھیں۔ان کی وفات پر کئی دینی، سیاسی ،سماجی، صحافتی اور ادبی شخصیات نے دکھ اور افسوس کا اظہار کرتے ہوئے سوگوار کنبے کے ساتھ تعزیت کا اظہار کیا ہے۔ندائے کشمیر کے ایڈیٹر معراج الدین فراز نے شکیل آزاد کی والدہ محترمہ کی وفات پر سخت رنج و غم کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ماں کا بچھڑنا بہت بڑا صدمہ ہوتا ہے۔انہوں نے کہا کہ غم کی اس گھڑی میں ندائے کشمیر کی پوری ٹیم شکیل آزاد اور ڈاکٹر نذیر آزاد کے علاوہ دیگر لواحقین کے غم میں برابر شریک ہے۔اس دوران نوو ادبی کاروان پلوامہ کے سرپرست اعلیٰ اور نامور شاعر اور ادیب عبدالرحمان فدا نے مرحوم عبدالرحمن آزاد کی اہلیہ کی وفات پر افسوس و دلی ہمدردی کا اظہار کیا ہے۔فدا نے اپنے تعزیتی پیغام میں دعا کی ہے کہ اللہ تعالی مرحومہ کو جنت الفردوس عطا کرے اور پسماندگان کو ماں کی جدائی کا صدمہ برداشت کرنے کی ہمت عطا کرے۔عبدالرحمان فدا کی صدارت میں ایک وفد نے قویل پلوامہ جاکر لواحقین کے ساتھ ہمدردی اور یکجہتی کا اظہار کیا۔ڈسٹرکٹ کلچرل سوسائٹی پلوامہ کے وائس چیئرمین غلام محمد دلشاد نے شکیل آزاد کی والدہ محترمہ کے انتقال پر صدمے کا اظہار کیا۔ ادبی مرکز کمراز نے معروف ادیب و شاعر ڈاکٹر نزیر آزاد کی والدہ کے انتقال پر گہرے رنج و غم کا اظہار کرتے ہوئے مرحومہ کے حق میںمغفرت کی دعا کرتے ہوئے دکھ کی اس گھڑی میں سوگواران کے ساتھ اظہار تعزیت کیا ہے۔اس دوران مراز ادبی سنگم مراز کے سرپرست غلام نبی آتش، صدر علی شیدا، نائب صدر ڈاکٹر محمد شفیع کے علاوہ اقبال انجم، یوسف جہانگیر، ریاض انزنو اور رشید سرشار نے اپنے تعزیتی پیغام میں ڈاکٹر نذیر آزاد اور شکیل آزاد سے تعزیت کا اظہار کیا۔ وادی کے کئی ادبی تنظیموں ڈسٹرکٹ کلچرل سوسائٹی پلوامہ،نوو ادبی کاروان، رومش ادبی و کلچرل فورم ،بزم ادب ہندوارہ ،اور نوسوز پیپلز فائونڈیشن پکھر پورہ بڈگام کے علاوہ شمالی کشمیر کی ادبی تنظیموں نے سوگوار خاندان کے ساتھ تعزیت کا اظہار کیا ہے۔دریں اثناء پلوامہ ورکنگ جرنلسٹ ایسوسی ایشن کے صدر شاہ ارشاد و دیگر ممبران نے شکیل آزاد اور ڈاکٹر نذیر آزاد کی والدہ محترمہ کے انتقال پر دکھ اور افسوس کا اظہار کیا۔ ادھر مرحومہ کے نماز جنازہ میں لوگوں کی ایک بڑی تعداد نے شرکت کرتے ہوئے انہیں پرنم اور اشکبار آنکھوں کے ساتھ سپرد خاک کیا۔مرحومہ انتہائی نیک سیرت خاتون تھیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں