ویڑیو

ای پیپر

اہم خبریں

سرینگر / 24مئی /این این این //سرینگر کے صورہ علاقے میں مشتبہ عسکریت پسندوں کی.

سرینگر / 24مئی /این این این//نیشنل کانفرنس کے اراکین پارلیمان ایڈوکیٹ محمد.

سرینگر / 24مئی /این این این /جنوبی ضلع اننت ناگ کے سنگم علاقے میںسڑک کے المناک.

سرکاری ملازمین کے تئیں حکومت کا رویہ تشویشناک

   23 Views   |      |   Wednesday, May, 25, 2022

سی سی ٹی وی تاجروں اور کاروباریوں کو نصب کرنے کا حکم تاناشاہی پر مبنی

دوہزار انیس(2019) کے بعد نافذ کئے گئے تمام ملازمین مخالف قوانین کو واپس لیاجائے/نیشنل کانفرنس

سرینگر /12اپریل / این این این// نیشنل کانفرنس نے کہا ہے کہ روزگار کی نئی پالیسیوں اور برطرفی کی مہم نے جموں و کشمیر میں ہراسانی کے دروازے کھول دئے ہیں اور نئے قوانین ملازمین کے حقوق اور زندگی گزارنے کے حق کے اصولوں کو کمزور کررہا ہے۔ جموںوکشمیر کے ملازمین جس دبائو کے تحت کام کررہے ہیں اُس پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے نیشنل کانفرنس کے ریاستی ترجمان عمران نبی ڈار نے کہاکہ ملازمین کسی بھی حکومت اور انتظامیہ کے پہیوں کے مانند ہوتے ہیں لیکن موجودہ حکومت کے طرف سے جاری کردہ فرمانوں اور احکامات کی وجہ سے سرکاری ملازمین غیر یقینیت اور بے چینی کا شکار ہوگئے ہیں۔ ندا نیوز نیٹ ورک کو موصولہ بیان کے مطابق من مانی برطرفی کی پالیسی سے ہمارے سرکاری ملازمین پر تلوار کی طرح لٹک رہی ہے اور اس طرح سے اقدامات نے سرکاری محکموں میں خوف کی فضا کو جنم دیا ہے۔ سرکاری محکموںمیں خوف کا ماحول عوامی مفادات کے منافی ہے اور اس کا براہ راست اثرعام شہری پر پڑ رہاہے۔ ایسے قوانین، جن سے ملازمین کی ملازمتوں پر ہمیشہ تلوار لٹکتی رہتی ہے، سے ملازم طبقہ کو مایوسی ، شک و شبہات اور غیر یقینیت کے بھنور میں دھکیل دیاہے۔ ایسی فضا میں ملازمین کیسے کام کرسکتے ہیں؟ موجودہ صورتحال دفاتر میں ورک کلچر کو بری طرح متاثر کررہی ہے ۔ جو ملازمین انتظامیہ اور حکومت چلاتے ہیں یہاں کے حکمرانوں نے انہی کیخلاف مہم چھیڑ رکھی ہے، جو انتہائی تشویشناک ہے۔ جموںوکشمیر کے ملازمین کے خلاف موجودہ حکومت کے رویے کو ان کے حقوق اور مراعات پر شب خون قرار دیتے ہوئے ترجمان نے ایسی پالیسیوں کو واپس لینے کا مطالبہ کیا جو انصاف اور بنیادی انسانی حقوق کے تصور کو مجروح کرتی ہیں۔انہوںنے کہا کہ حکومت کو ایسے احکامات جاری کرنے کے بجائے لوگوں کے حقوق اور ان کی روزی روٹی کا تحفظ یقینی بنانا چاہیے۔انہوں نے مزید کہا کہ ڈیلی ویجر اور دیگر عارضی ملازمین کے ساتھ کئی دہائیوں سے امتیازی سلوک کیا جا رہا ہے باوجود اس کے کہ وہ عوام کی لگن اور عزم کے ساتھ خدمت کر رہے ہیں۔زیادہ تر معاملات میں یہ عارضی ملازمین اپنے خاندان کے واحد کمانے والے ہوتے ہیں۔حکومت اس استحصال زدہ طبقے کو سماجی اور معاشی انصاف فراہم کرنے کی ذمہ داری سے غافل نہیں رہ سکتی۔انتظامیہ کے اس اہم جزو کو درپیش مسائل کو اجاگر کرتے ہوئے عمران نے کہاکہ 61000 ڈیلی ویجر اور عارضی ملازمین اپنی مستقلی کیلئے کئی دہائیوں سے انتظار میں ہیں۔مستقلی میں تاخیر کی وجہ سے وہ متعدد فوائد سے محروم ہو جاتے ہیں ۔ترجمان نے کہاکہ ایک طرف حکمران آئے روز ہزاروں نوکریاں اور روزگار کے مواقع فراہم کرنے کے اعلانا ت اور دعوے کررہے ہیں لیکن زمینی سطح پر روزگار دینے کے بجائے روزگار چھینا جارہاہے۔

متعلقہ خبریں

سرینگر / 24مئی /این این این //سرینگر کے صورہ علاقے میں مشتبہ عسکریت پسندوں کی فائرنگ میں پولیس اہلکار اور اس کی بیٹی.

سرینگر / 24مئی /این این این//نیشنل کانفرنس کے اراکین پارلیمان ایڈوکیٹ محمد اکبر لون اور جسٹس (ر) حسنین مسعودی نے دھان.

سرینگر / 24مئی /این این این /جنوبی ضلع اننت ناگ کے سنگم علاقے میںسڑک کے المناک حادثے میں 23سالہ موٹر سائیکل سوار لقمہ.

سرینگر / 24مئی /این این این //جنوبی ضلع کولگام کے ادی بل وٹو علاقے میں نالہ ویشو کے نزدیک ایک عدم شناخت شہری کی نعش.

نوٹ گزشتہ برسوں کے افسانوی ایونٹس کی کامیابی کو دیکھتے ہوئے ولر ادبی فورم نے اس سال بھی فن افسانہ کو فروغ دینے کے.